Trading Bitcoin

ٹریڈنگ بٹکوائن 

اس سے پہلےکہ آپ اس مضمون ‘ ٹریڈنگ بٹکوائن’ کے بارے میں جانیں ہمیں یہ تاثر ہے کہ آپ پہلے ہی سے بٹکوائن کی بنیاد سے آشناء ہیں۔ اگر نہیں تو اس مضمون کو شروع کرنے سے پہلے ہمارے دوسرے خاص مضامین کو پڑہیں۔ یہ مضامین درج زیل میں اپنے تاریخی اعتبار سے فہرستی شکل میں دیئے گئے ہیں :

بٹکوائن کو قبول کرنا

بٹکوائن کو استعمال کرنا

بٹکوائن کو مائن کرنا

بٹکوائن کو خریدنا

ٹریڈنگ بٹکوائن قانونی انتباہ کے ساتھ آتی ہے اور بعض اوقات اپنی جبلت کے ساتھ اور بعض اوقات حکومتوں کی طرف سے لکھے ہوئے ہمدردانہ کتابچوں کے ساتھ۔

ڈیجیٹل گولڈ نے بلاشک بڑی حد تک گلوبل ٹریڈرز اور انویسٹرز کو اپن رِسکی اتار چڑہاؤ اور منہ میں پانی لے آنے کی وجہ سے بڑی کامیابی حاصل کر لی ہے۔  اور کسی بھی قیاس آرائی کی مارکیٹ  میں ٹریڈرز کے دماغوں میں ڈراؤنے خواب لانے کے لیے بٹکوائن کی مشکلات کا بھی حصہ ہے۔

لیکن اگر آپ اس کے باوجود اس میں دلچسپی رکھتے ہیں، تو اس میں چھلانگ لگانے سے پہلے یہاں ہم کچھ پیش کررہے ہیں جس کو جاننا آپ کے لیئے ضروری ہے۔

بٹکوائن مارکیٹ کیا ہے ؟

بٹکوائن ٹریڈنگ، بٹکوائن مارکیٹ،  ایسی جگہ ہے جہاں بٹکوائن کی فعال طور پر دوسرے قدر رکھنے والے اثاثوں میں تجارت کی جاسکے۔ نہایت سادہ الفاظ میں اس کو بٹکوائن مارکیٹ کہتے ہیں۔

یہ ایک فوریکس بازار کی طرح ہے جس میں ایک آدمی ایک کے بدلے میں دوسری کرنسی خریدتا ہے۔  لیکن فیئٹ کرنسیوں کے برعکس، جو قوموں کے معاشی اور مالی حثیت کے مطابق بنائی جاتی ہیں، بٹکوائن ان طاقتور اور پراثر عوامل کو زہن میں رکھے بغیر بنائی جاتی ہے۔ ڈیجیٹل کرنسی عام طور پر ایک ایسے پراسس جس کو ‘مائننگ’ کہتے ہیں کے زریعے سے بنائی جاتی ہے، جہاں مائننگ کرنے والا 50 بی ٹی سی کے بلاک کو ریاضیاتی جمع تفریق (محاسبات) کے بعد نتیجہ کے طور پر حل کرتا ہے۔

بٹکوائن کی مارکٹ بلکل ایسے ہی کام کرتی ہے ہے جیسے (کافی، سونا)، کشید / نکالے جاتے ہیں اور مارکیٹ میں بیچے جاتے ہیں، اس کی قیمت میں اتار چڑہاؤ طلب اور رسد میں اتار چڑہاؤ پر منحصر ہے۔

 آپ بٹکوائن کی تجارت کہاں کرتے ہیں

 ہم نان مائنرز کے لیے بٹکوائن حاصل کرنا ایک سال پہلے کی نسبت اب بہت آسان ہو گیا ہے۔  اب ایک آدمی کو بٹکوائن کی خریدو فروخت کے لیے  کسی درست ملک میں ہونا چاہیے، جہاں ایکسچینجز قانوی طور پر کرنسی کی ٹرانزیکشنز میں مالی واسطہ بنا سکتی ہوں، جہاں آپ کے فنڈز کے استعمال کے بارےمیں اندرونی اور بیرونی حملوں سے بچ سکیں۔ یہ ایکسچینجز فوری طور پر آپ کے بٹکوائن کو یو ایس ڈالر یا کسی دوسری فیئٹ کرنسی میں تبدیل کرتے ہیں اور اس کی بنیاد ان دونوں کی قیمت میں اتار چڑھاؤ پر مبنی ہے،  اور ایک ہی وقت میں کوئی اپنی ہولڈنگز کی خرید و فروخت کرتا ہے اور اچھا منافع کما سکتا ہے۔ اس پراسس کو آربٹریج کہتے ہیں (اس کی مزید وضاحت درج زیل میں ہے)

بٹکوائن کو ٹریڈ کرنے کے لیے ضرروری اشیاء

         بٹکوائن ایکسچینج اکاؤنٹ 

آپ کو بس اتنا کرنا ہے کہ آپ ایک قابلِ اعتبار بٹکوائن ایکسچینج کو ڈھونڈیں، ان کے ساتھ سائن اپ کریں اور مطوبہ زاتی معلومات دیں، بس یہ عمل آپ کو اہل بنا دے گا کہ آپ مارکیٹ سے براہ راست بٹکوائن کی خریدوفروخت کر سکتے ہیں۔

زاتی معلومات کے بارے میں بات کرتے ہوئے، آپ کو سائن اپ کرنے سے پہلے کے وائی سی اور اے ایم ایل کی کیا ضرورتیں ہیں کے متعلق جاننا چاہیے۔  ابھی کچھ نئے انتظامی فریم ورک کے مطابق، حکومتوں نے بٹکوائن ایکسچینج کرنے والی کمپنیوں کو کچھ شناختی طریق کار اختیار کرنے کی ہدایات دی ہیں ( وہ جو بینکس کی طرف سے اختیار کی جاتی ہیں) جہاں استعمال کنندہ کو کہا جاتا ہے کہ وہ اپنی خفیہ معلومات بتائے۔ یہ طریقہ کار صرف اس لیے اختیار کیا گیا ہے کہ استعمال کنندگان بٹکوائن کو معاشرے کے خلاف کاموں جیسے کہ منی لانڈرنگ، دہشت گردی کے لیے مالی مدد کرنا، ڈرگز کو ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جانا، وغیرہ وغیرہ میں استعمال نہ کر سکیں۔

قابلِ اعتبار بٹکوائن ایکسچینج 

ہم آپ کو یہ  سفارش کرتے ہیں کہ آپ بٹکوائن ایکسچینجز کے ساتھ سائن اِن کرنے سے پہلے اُن کے بارے میں مقامی حکومتی ادراروں سے اچھی طرح جانچ پڑتال کرلیں۔ آپ یہ اچھی طرح سے دیکھ بھال کرلیں کہ بٹکوائن ایکسچینج قانونی ضوابط کے مطابق کام رہا ہے یا نہیں، اور یہ بھی دیکھ لیں کہ یہ ایکسچینج کبھی کسی غلط اور غیر اخلاقی کاموں میں ملوث نہیں رہے۔ آپکو کوئی بھی فیصلہ کرنے سے پہلے آزادانہ تبصرے بھی پڑھنے چاہئیں۔ ہم آپ کو اس ویب سائٹ کی سفارش کرتے ہیں۔

http://bitcoinexchangeguide.com.

کچھ فوریکس ٹریڈنگ کا علم

 جہاں رسک ہو گا وہاں فائدہ بھی ہو گا۔۔۔۔ بس آپ کو چاہیے کہ آپ ھوشیار ٹریڈنگ تجزیہ نگار ہوں تاکہ رسک سے بچ سکیں اور دوسرے یعنی فائدہ کو حاصل کرسکیں۔ ہم بہرحال آپ کو یہ سفارش کرتے ہیں کہ آپ فوریکس کے اشارات اور حکمت عملیوں کے بارے میں سیکھیں۔۔۔۔ تاکہ آپ کسی ممکنہ قیمت اور  ٹریڈ کے بارے میں ایکشن لینے سے پہلے پیشین گوئی کر سکیں۔ آپ بٹکوائن کی قیمتوں میں روزانہ کی معلومات حاصل کرنے کے لیے نیوز بی ٹی سی پڑھنے کا انتخاب کر سکتے ہیں۔

ہم بہرحال آپ کو بنیادی فرھنگ مہیا کرتے ہیں جو آپ کو فوریکس کی زبان سمجھنے میں  تھوڑی مدد دے گی۔  وہ فرھنگ درج زیل ہے:

آسک پرائس: اس سے مراد ایک خاص ٹریڈنگ سائٹ پر  بٹکوائن کی کم از کم قیمت ہے جس پر لوگ اِس کو بیچنے پر رضامند ہو جاتے ہیں۔

بِڈ پرائس: اس سے مراد بٹکوائن کی وہ زیادہ سے زیادہ پرائس ہے جو آپ ادا کرتے ہیں۔  بٹکوائن ٹریڈنگ کی اصطالاحات اور مفردات

ٹریڈ سائٹ کا حجم: اس سے مرا مالی یونٹس کی مقدار ہے جو ایک خاص وقت کے دوران بیچی جاتی ہیں۔

مارکیٹ کی گہرائی: اس سے مراد ٹریڈنگ سائٹ میں فروخت کے لیے رکھے ہوئے بٹکوائن کی تعداد ہے، جو ابھی خریدی نہیں گئی ( اور اس طرح سے ابھی کوئی بھی آدمی اس کی قیمت دینے کے لیے تیار نہیں ہے)۔

سپیکولیٹر /بروکر: ایسا آدمی ہوتا ہے جو بٹکوائن کو کم قیمت پر خرید کر زیادہ قیمت پر فروخت کر کے منافق کمانے کی کوشش کرتا ہے۔

آربیٹریشن: اس سے مراد ایسا عمل ہے جس کے کرنے سے آپ مختلف ٹریڈنگ سائٹس پر قیمت میں موجودہ فرق کا فائدہ اٹھاتے ہوئے منافع کماتے ہیں۔

اُونچی فریکؤنسی ٹریڈنگ:  اس سے مراد ایسا عمل ہے جس سے آپ تھوڑے وقت میں قیمت کی نقل و حرکت کے بارے میں پیشین گوئی کرکے منافع کماتے ہیں۔

بَبَل: یہ کچھ وجوھات کی وجہ سے وقوع پزیر ہوتا ہے، جب بٹکوائن کی طب بہت ہی بڑھ جاتی ہے، اور اس طرح سے ایک ہی لمحہ میں اس کی قیمت بہت اونچی جاتی اور گرتی ہے اس کی وجہ طلب میں ‘فاؤنڈیشن’  کا فقدان ہے۔

مارجن ٹریڈنگ: یہ بروکری کی بہت ہی رِسکی شکل ہے جس میں بٹکوائن کی تجارت ادھار لی ہوئی رقم سے کی جاتی ہے۔ ایسا کرنا بہت منافع بخش ہے مگر فورسڈ لکویڈیشن کے رسک پر۔

احتیاطی تدابیر اور خطرات

سرمایہ کاری کے خطرات 

جیسا کہ ہم نے اس مضمون کے شروع میں بیان کیا تھا، کہ بٹکوائن میں سرمایہ کاری بلا شبہ پُر خطر ہے اور کمزور معدے والوں کے لیے نہیں ہے۔ آپ کو واقعی اس میں داخل ہونے سے پہلے بہت حد تک اس کا یقین ہونا چاہیے۔

اس رِسک کا بڑا حصہ بٹکوائنز کی غیرروایتی قیمت کے اتار چڑھاؤ کو کریڈٹ ہو جاتا ہے۔ فیئت مارکیٹ سے ہٹ کر جہاں اتار چڑھاو چند پینیز تک محدود ہوتا ہے، بٹکوائن میں پورے ڈالر کی رقوم کا فرق دیکھا جاتا ہے۔ اس میں بلکل درست طور پر بٹکوائن کا فال 1000 ڈالر سے 225 ڈالر تک دکھایا جا سکتا ہے۔ سرمایہ کنندگان یہ یقین رکھتے ہیں کہ ڈیجیٹل کرنسی سپیکولیٹو صورتِ حال میں تھی لہزا دوسرے بُرے ایکٹرز کی وجہ سے اسے بہت ہی زیادہ اوپر نیچے کا سامنا کرنا پڑا۔

اس طرح کے اتار چڑھاؤ سے بچنے کے لیے، ہم تاجروں کو مشورہ دیتے ہیں کہ وہ اپنے پہلے موقع پر اپنے فنڈز کو کم کریں۔  ایک چھوٹا سا ریوارڈ بہت بڑے نقصان کی نسبت پھر بھی بہتر ہے۔

والیٹ سیکیورٹی 

ایک دوسرا فیکٹر جو بٹکوائن انڈسٹری پر کپکپی تاری کیے ہوئے ہے وہ بٹکوائن ایکسچینجز کے ہاٹ والیٹ کو مسلسل ہَیک کرنے کی کوششیں ہیں۔  ایک حیران کر دینے والا کیس ایم ٹی۔ گوکس سب سے بڑی مثال ہے، جس میں 450 ملین ڈالر کے برار بٹکوائن رقم چوری کر لی گئی۔ بعد میں بھی بہت سارے ایکسچینجز اسی طرح کی چوری کے شکار بنے بشمول بِٹ سٹیمپ، بِٹ فائنیکس اور بہت سارے دوسرے۔

لہزا یہ مشورہ دیا جاتا ہے کہ آپ اپنے اکیسچینجز ہاٹ والیٹ میں بہت کم مقدار میں فنڈز رکھیں، جبکہ بقایا فنڈز آف لائن کے کولڈ والیٹ میں رکھیں۔

SUBSCRIBE TO OUR NEWSLETTER